MY BLOG

مہنگائی اور بڑھتی غربت کی پریشانی کا حل

مہنگائی اور بڑھتی غربت سے ہر کوئی ہی پریشان دکھائی دیتا ہے۔ اور چاہتا ہے کہ وہ کس طرح مالدار بن جائے مگر کیسے؟

آئیے جانیئے مالدار کیسے بننیں ۔۔

 دوستانہ بجٹ: دوستانہ بجٹ سے مراد کیا ہے
آپ اپنی تمام ضروریات کی ایک فہرست بنائیں اور ہر چیز کی قیمت (رقم) بھی اس کے ساتھ درج کرلیں۔
اب یہ دیکھیں کہ اس لسٹ میں موجود تمام چیزوں میں سے کون سی چیز غیر ضروری ہے جس کا استعمال آپ عموما نہیں کرتے۔۔ مثلاً گھر میں کھانے کی ہر چیز موجود ہونے کے باوجود بھی آپ بازار سے لا رہے ہیں۔۔۔
اگر یہ صورتحال ہے تو اپنی شاپنگ کی فہرست سے وہ چیزیں نکال دیں اور وہ چیزیں نہ خریدیں۔ جس سے کافی حد تک آپ کو پیسوں کی بچت ہو سختی ہے۔

 بازاری کھانا: گزرتے وقت کے ساتھ ساتھ بازاری کھانے کھانا ایک  فیشن بن چکا ہے جو صحت کے لئے نقصان دہ ہونے ساتھ ساتھ رقم کا ضیاع کا باعث بھی ہے جتنا زیادہ ہو سکے باہر کے کھانے سے اجتناب کریں اور گھر کا خالص اور تازہ کھانا کھائیں جو آپ کی صحت اور آپ کی رقم کی بچت کا باعث بھی ہے۔

 باہمی فنڈز میں سرمایہ کاری: باہمی فنڈز میں سرمایہ کاری کریں۔ کچھ بنک آئی سیوونگ سروس پیش کرتے ہیں جس کے تحت آپ آن لائن اپنی مرضی کے مشترکہ فنڈز میں سرمایہ کاری کرکے روزانہ کی بنیاد پر آن لائن پیسہ کما سکتے ہیں۔ اور جب چاہیں اپنا لگایا ہوا پیسہ شرعی اصولوں کے مطابق واپس حاصل کر سکتے ہیں۔
 متعدد ذرائع معاش: مختلف ذرائع معاش تلاش کریں اور ایک ہی کاروبار یا نوکری پر انحصار کرنے کے بجائے دیگر مختلف کاموں میں دلچسپی بڑھائیں اور ایک وقت میں مختلف جگہ ملازمت اختیار کرکے اپنی آمدنی میں اضافہ کرنے کی کوشش کریں۔ کسی بھی کام کو حقیر یا بڑا تصور نہ کریں۔ اس راز پر عمل کرکے آپ اپنا ذاتی کاروبار بھی شروع کر سکتے ہیں۔
 ماہانہ بچت: ماہوار بچت کی عادت ڈالیں اور ہر مہینے تھوٹی تھوڑی رقم محفوظ کرنا شروع کریں تاکہ جس مہینے خرچہ زیادہ ہو جائے آپ کی سیونگ آپ کے حالات میں استحکام پیدا کرسکے۔
 کریڈٹ کارڈ کا استعمال: کریڈٹ کارڈ کا استعمال ممکنہ حد تک کم کریں۔ کریڈٹ کارڈ رقم کی ادائیگی کا ایک انتہائی آسان طریقہ ہے لیکن کوشش کریں کہ اس کو کم از کم استعمال کریں اورخود کو زیادہ سود اور قرض کی شرائط سے دور رکھیں۔ اس سے آپ کو ماہانہ تین سے چار فیصد اضافی ٹیکس کی ادائیگی سے چھوٹ بھی مل جائے گی جس سے آپ کے اخراجات میں نمایاں فرق پڑے گا۔
 قابل استعمال اشیاء: گھر میں موجود پرانی قابل استعمال اشیاء کو بغیر ضرورت دری میں ڈالنے کے بجائے استعمال کریں اور نئی اشیاء کو خرید کر اپنی رقم ضائع نہ کریں۔
درجہ بالا اصولوں پر عمل پیرا ہو کر آپ بہت حد تک مہنگائی کی پریشانی اور غربت کی پریشانی سے بچ سکتے ہیں۔

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

Waseelah is an initiative which aims to promote tolerance and harmony. Lately, it has been plagued the horrors of extremism, and this ideology stems from the irrational and illogical reasoning given by people, with underlying motives, to destabilize the country. The waseelah wants to make the bigger picture obvious; our idea is to sow love and peace in world wide .

calendar

October 2020
M T W T F S S
« Aug    
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
262728293031  
To Top